711

قبائل کے نام پیغام

اعلامیہ رھبری شوری تحریک طالبان پاکستان

قبائل کے نام پیغام

ہم تحر یکِ طالبان پا کستان تمام پختون قوم اور بالخصوص قبائل کو مطلع کرتے ہیں کہ پا کستان نے ہمیشہ کیلئے اپنی غلط پا لیسیوں کی وجہ سے قوم اور ملک پر جنگیں مسلط کر رکھی ہے اور پھر مسلسل ان تمام جنگوں میں پختون قوم اور بالخصوص قبائل کو قربانی کے بکرے کے طور پر استعمال کر رہا ہے ۔حالیہ پرائے جنگ میں فرنٹ لائن اتحادی بن کر 70 ہزار لا شوں کا تحفہ اتحادیوں کے سامنے پیش کیا ،اب اگلے مرحلے میں انڈیا کے محاذ پر قوم کے بقیہ سپوتوں کو بطورِ نذرانہ پیش کرنے کا ارادہ کیا ہوا ہے ۔تو اس صورتِ حال میں ہم پختون قوم اور بالخصوص قبائل کو دو پیغام دینا چاہتے ہیں ۔

پہلا پیغام یہ کہ اپنا دشمن پہچان لیجئے !ہمیں امید ہے کہ پختون قوم کا حافظہ اتنا کمزور نہیں ہو گا کہ اپنے بیوی، بچوں، ما ؤں ،بہنوں کی لا شوں کےٹکڑے اور اپنے کھنڈر گھروں کا ملبہ بھول چکے ہونگے لہٰذا ہمیں ماضی قریب اور حال کے مظالم یاد دلانے کی ضرورت نہیں ہے لہٰذا پا کستان کے اس قاتل ،ظالم اور سفاک فوج کی حمایت میں نعرے لگانا ،ریلیاں نکالنا،میڈیا پر اچھلنا،کودناپوری پختون قوم اور بالخصوص قبائل کے حق میں حد درجےباعث شرم وعبرت ہےتو پختون قوم ان چیزوں سے پرہیز کیجئے اس کا نتیجہ بہتر نہیں ہو گا۔

دوسراپیغام یہ کہ انڈیا سے دفاع کے حوالے سے قبائل میں امن کمیٹیاں نہ بنائیں ۔خدا را ذرا آنکھیں کھو لئیے پاکستان کو انڈیا کے خلاف تمھاری بہادری کی کو ئی ضرورت نہیں ہے،انڈیا پاکستان کے مشرقی کنارے پر ہے اور تم پاکستان کے مغربی کنارے پر دفاعی کمیٹیاں بنا رہے ہو ں۔

بہتر یہ ہے کہ یہ امن کمیٹیاں پنجاب بنائے..

خدا کے بندو!پاکستان تم سے کمیٹیاں اس لئے بنوا رہا ہے تاکہ دنیا کے سامنے تمھاری بیوقوفی اور بے ضمیری آشکارہ کرے کہ دیکھوان بے ضمیروں کو کہ آدھے پٹھان خان جیلوں میں ہیں آدھے لاپتہ اور قبروں میں اور باقی میرے سامنے بطورِ ڈھال کھڑے ہیں ،

اے ہم وطنوں! یہ امن کمیٹیاں نہیں ہیں ،یہ انڈیا سے دفاع نہیں ہے بلکہ یہ قبائل کیلئے موت کا پیغام ہے،یہ قبائل پر ایک نئی جنگ کا آغاز ہے، پاکستان اپنی فوج کو بچا کر ہمیں آپس میں دست بگریبان کرنا چاہتا ہے حالانکہ ہماری آپس میں کوئی دشمنی نہیں ہے ہماری دشمنی اس ظالم فوج کیساتھ ہے جس نے زبردستی ہمارے علاقے پر قبضہ کر رکھا ہے ۔لہٰذا پوری پختون قوم اور بالخصوص قبائلی مشران سے ہماری گزارش ہے کہ پرائی پنجابی جنگ اپنے اوپر مسلط نہ کیجئے قبائل میں امن کمیٹیاں نہ بنائیں بلکہ مجاہدین کے ساتھ مل کر اپنے بیوی بچوں کے قاتلین سے بدلہ لیجئے۔

والسلام

رہبری شوری تحریک طالبان پاکستان

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں